تراڑکھل: با اثر غنڈے نے سر بازار خاتون پر تھپڑوں‌کی بارش کر دی، شہر میں غنڈہ گردی اپنے عروج پر ، انتظامیہ بے بس

تراڑکھل (کرائم رپورٹر ) تراڑکھل غنڈہ راج اپنے عروج پر ، با اثر شخص (بابو) کے بیٹوں کے بعد اب پوتوں نے بھی باضابطہ سرعام غنڈہ گردی شروع کر دی.

کے ٹی وی نیوز کی رپورٹ‌کے مطابق تراڑکھل شہر کے ایک با اثر شخص بابو کے پوتے جسکا نام یاسر طارق بتایا جا رہا ہے، نے ایک خاتون کو چھیڑنے سے منع کرنے پر سر بازار تھپڑوں سے پیٹ ڈالا. سر بازار حوا کی بیٹی کی چادر کے تقدس کو پامال کیا گیا.

یہ واقعہ 21 اپریل بروز بدھ اس وقت پیش آیا جب ایک خاتون خریدار کو سر بازار یاسر طارق نامی آوارہ گرد نے چھیڑا، خاتون کے منع کرنے پر بھی ملزم باز نہ آیا جس پر خاتون نے اسے بری طرح سے ڈانٹ دیا. خاتون کے ڈانٹنے پر ملز آپے سے باہر ہوگیا اور سر بازار خاتون پر تھپڑوں اور مکوں کی بارش کر دی.

‎واقعہ کے خلاف مقامی تھانے میں درخواست دائر کی گئی لیکن ملزم اتنے با اثر پائے گئے کے پولیس بجائے قصور وار کے خلاف کاروائی کرنے کے الٹا خاتون کو ہی ڈرانے دھمکانے کی کوشش کی.

سوشل میڈیا اور عوامی حلقوں میں اس واقعہ پر شدید مذمت کی گئی ہے. شہریوں کا کہنا ہے کہ اگر انتظامیہ نے ملزم کے خلاف کاروائی نہ کی گئی اور ‎ان شر پسند عناصر کی باز پرس نہ کی گئی تو تراڑکھل شہر خواتین اورشرفاء کے لیے ریڈ زون بن جائیگا.
‎واضع رہے کے ملزم کے چچا نے بھی تین سال پہلے سرِ عام بازار میں ایک نہتے انسان کو قتل کر کے نعش کی بے حرمتی بھی کی تھی لیکن ملزمان اتنے بااثر اور طاقتور ہیں‌کہ سر عام اور سر بازار قتل کرنے کے باوجود قانون قاتل کو ایک سال سے زیادہ سلاخوں کے پیچھے نہ رکھ سکا. جس سے ملزمان کی دیدہ دلیری اور بڑھ گئی اور اب سر عام خواتین کی عزتوں‌پر ہاتھ ڈالنا شروع کر دیا.