جمعیت علماء اسلام کے رہنما جمعیت علماء اسلام پیر سید عبداللہ شاہ مظہر ساتھیوں کے ہمراہ جے یو آئی سے مستعفی مسلم کانفرنس میں شامل ہو گئے

راولپنڈی (کے ٹی وی نیوز )جمعیت علماء اسلام کے رہنما عبداللہ شاہ مظہر جے یو آئی سے دیرنہ رفاقت ترک کر کے مسلم کانفرنس میں شامل ہو گئے .

تفصیلات کے مطابق نیلم ویلی سے تعلق رکھنے والے سابق امیدوار اسمبلی و مرکزی رہنما JUI آزادکشمیر پیر سید عبداللہ شاہ مظہر اپنے ساتھیوں کے ہمراہ جے یو آئی سے مستعفی ہوکر مسلم کانفرنس میں شامل گئے ہیں. سردار عتیق احمد خان، چیئرمین پارلیمانی بورڈ راجہ محمد یاسین خان، چیئرمین یوتھ سردار عثمان علی خان، شمیم علی ملک، مفتی منصورالرحمان، سردار عابد رزاق، میاں عبدالقدوس، واجد بن عارف ایڈووکیٹ،سید یاسر کاظمی، کمانڈر سردار شفیق، عبدالمجید مغل، عبدالصمود اعوان، قاری رفیق اعوان اور دیگر نئے شامل ہونے والوں کو ہار پہنائے ۔

شامل ہونے والوں کو سابق وزیراعظم سردار عتیق، عثمان عتیق اور دیگر نے مسلم کانفرنس میں شامل ہونے پر خوش آمدید کہا اور کہا کہ مسلم کانفرنس آزادکشمیر کی ریاستی جماعت ہے جس نے ہمیشہ عوامی مسائل مسئلہ کشمیر کیلے جدوجہد کی ہے۔ یہ ریاست کے لوگوں کی اپنی جماعت ہے۔ سردار عثمان عتیق نے اس موقع پر کہا کہ آنے والے کچھ دنوں میں آزادکشمیر کی بڑی شخصیات مسلم کانفرنس کا حصہ بنیں‌گی.

سردار عتیق احمد خان نے شامل ہونےوالے افراد کو یقین دہانی کروائی کہ وہ جس عزم سے جماعت میں آئے ہیں ، جماعت اس سے بڑھ کر کرادار ادا کرےگی.

سابق رہنما جمعیت علماء اسلام عبداللہ شاہ مظہر کا کہنا تھا پاکستان مسلم کانفرنس آزادکشمیر کی واحد سب سے پہلی پرانی سیاسی اور ریاستی جماعت ہے جس نے تحریک آزادی کشمیر کی بنیاد رکھی تھی. جس نے ہمیشہ کشمیر کے مسئلہ پر کشمیریوں کی ترجمانی کی. مسلم کانفرنس کی چھتری تلے آزادکشمیر کے عوامی مسائل اور خصوصا مسئلہ کشمیر کیلے یک جان ہو کر کام کریں گئے.

اُن کے مطابق مسلم کانفرنس کے نظریہ نے متاثر کیا جس سے اس جماعت میں شامل ہونا اعزاز سمجھا