پلندری : آل جموں وکشمیر مسلم کانفرنس سدھنوتی کے ضلعی صدر نامزد امیدوار حلقہ ایل اے23 سردار عابد رزاق خان نے کہا مسلم کانفرنس کا انتخاب میں حصہ لینے کا فیصلہ اٹل ہے.

انتخابی اتحاد کاتجربہ درست ثابت نہیں ہوا ،حکومتی اتحاد زیادہ مناسب ہے ہم ریاستی تشخص کشمیر کی سالمیت کشمیر کی آزادی حق استصواب رائے کے حصول اور پاکستان سے الحاق تک اپنی سیاسی جہد وجہد جاری رکھیں گے.

سودے بازی کی سیاست نےنظریاتی سیاست کو ختم کر دیا جو انتہائی خطرناک ہے کل جب استصواب رائے کا حق ملے گا تو پیسوں کی بنیاد ہمارے دشمن ہندوستان کے پاس زیادہ وسائل ہیں.

ہم اس آزادی کی بھی حفاظت نہیں کر سکیں گے جو ہمارے اسلاف نے حاصل کے مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ تک پہنچایا اور آج اسکی بنیاد پر اقوام عالم اس کے حل کے لیئے کوشاں ہے اگر یہ نہ ہوتا تو حیدرآباد کشمیر سے وسائل آبادی اور رقبہ کے لحاظ سے بہت زیادہ تھی، جونا گڑھ کا بھی ایسا ہی حشر ہوا لیکن ہمارے اسلاف نے آذادی غازی ملت سردار محمد ابرہیم خان کی قیادت میں آل جموں وکشمیر مسلم کانفرنس کی جونجال ہل کے مقام پر بیس کیمپ کی حکومت قائم کی اور مجاہدین کی قربانیوں نے مسئلہ کوزندہ رکھا.

مسلم کانفرنس نے آزاد خطے کی تعمیر وترقی اداروں کے قیام کا جو پلان بنایا اس سے تقدیر بدل گئی.

ان خیالات کا اظہار انھوں نے پر ہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کے دوران کیا.

پلندری : سردار عابد رزاق پریس کانفرنس کر رہے ہیں

اس موقع پر ممبر مجلس عاملہ سردار تسنیم احمد خان مرکزی وائس چیرمین یوتھ ونگ سردار مظہر آکاش امریز جمیل رضوان احمد خان، سردار ریحان خان، ظفر اقبال، سردار شبیر عباسی،سردار شہزاد عباسی، اور کارکنان کی بڑی تعداد موجود تھی۔

سردار عابد رزاق نے کہا کے اگر کام کی بنیاد بناکر ووٹ کی بات کی جائے تو مسلم کانفرنس کے دور کو نفی کر دیا جائے تو کوئی ادارہ نظر نہیں آتا.

انھوں نے کہا کہ یہ تاثر بالکل غلط ہےکہ مسلم کانفرنس کا امیدوار تحریک انصاف کے حق میں ہو جائے گا، ہم مجاہد اول سردار محمد عبدالقیوم کے تربیت یافتہ کارکن ہیں، مسلم کانفرنس کے نظریات کے محافظ ہیں.

ہم کسی بڑی خوش فہمی میں نہیں ہیں اور نہ ہی کوئی بونگی مارنے کے حق میں ہیں انشاء اللہ مسلم کانفرنس کا آئندہ انتخابات میں کامیابی حاصل کرے گی آئندہ آزاد کشمیر میں بننے والی حکومت میں مسلم کانفرنس کا رول ہو گا۔